ماہنامہ الشریعہ

جلد ۲۸ - شمارہ ۳ - مارچ ۲۰۱۷ء

مسلمانوں کے خلاف جنگ میں غیر مسلموں کی معاونت
محمد عمار خان ناصر

اردو تراجم قرآن پر ایک نظر (۲۸)
ڈاکٹر محی الدین غازی

استاذ القراء حضرت قاری محمد انور قدس اللہ سرہ العزیز
ابو عمار زاہد الراشدی

اقلیتوں سے متعلق مسلمانوں کے فکری تحدیات
ڈاکٹر محمد ریاض محمود

ماہنامہ ’’الشریعہ‘‘
محمد سلیمان کھوکھر ایڈووکیٹ

DNA کے بارے میں چشم کشا حقائق
مولانا مفتی منیب الرحمن

دیوبند وبریلی: اختلافات سے مشترکات تک
سراج الدین امجد

Article image..
(۱۰۸) القا ء کا ترجمہ۔ القاء کا مطلب ڈالنا اور رکھنا ہوتا ہے، پھینکنا اس لفظ کی صحیح ترجمانی نہیں کرتا ہے، بعض لوگوں نے جگہ جگہ اس لفظ کا ترجمہ پھینکنا کیا ہے، کہیں کہیں اس سے مفہوم میں فرق نہیں پڑتا، لیکن کہیں تو اس ترجمہ سے مفہوم میں واضح طور پر خرابی آجاتی ہے۔ ہم پہلے وہ آیتیں ذکر کرتے ہیں جہاں القاء کا ترجمہ پھینکنا ہوہی نہیں سکتا ہے، اس لئے کسی نے یہ ترجمہ نہیں کیا ہے، خاص طور سے سید مودودی نے بھی نہیں، جو کہ اکثر جگہ القاء کا ترجمہ پھینکنا کرتے ہیں: (۱) وَأَلْقَی فِی الأَرْضِ رَوَاسِیَ۔ (النحل:۱۵) ’’اس نے زمین میں پہاڑوں کی میخیں گاڑ دیں‘‘ (سید مودودی) ’’اور اس نے زمین میں لنگر ڈالے ‘‘(احمد رضا خان) (۲) وَأَلْقَی فِی الْأَرْضِ رَوَاسِیَ۔ (لقمان: ۱۰) ’’اس نے زمین میں پہاڑ جمادئے ‘‘(سید مودودی) ....
قرآن / علوم قرآن
حدیث و سنت / علوم الحدیث
اسلامی شریعت
دین و حکمت
سیرت و تاریخ
فقہ / اصول فقہ
دین اور معاشرہ
اسلام اور عصر حاضر
عالم اسلام اور مغرب
اسلامی تحریکات اور حکمت عملی
جہاد / جہادی تحریکات
اسلام اور سیاست
پاکستان ۔ قومی و ملی مسائل
مسلم مکاتب فکر ۔ باہمی مکالمہ
نقد و نظر
آراء و افکار
تعلیم و تعلم / دینی مدارس
مسلم مفکرین
شخصیات
حالات و واقعات
حالات و مشاہدات
مشاہدات و تاثرات
الشریعہ اکادمی
اخبار و آثار
مکاتیب
ادبیات
تعارف و تبصرہ
امراض و علاج